کسان بھی باہر نکل آئے

خوشاب نیوز ڈاٹ کام)کسان پیکج کے تحت ریلیف نہ ملنے پر جوہرآباد کے نواحی قصبات ہڈالی اور بولہ کے سینکڑوں کسانوں نے ڈی سی او آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا ‘ مظاہرین کی قیادت فوجی محمد امیر نے کی۔ مظاہرین نے محکمہ ریونیو کے افسران کے خلاف شدید نعرہ بازی کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ حکومت کے اناؤنس کردہ کسان پیکج کے ثمرات سے تمام کاشتکاروں کو بلا امتیاز مستفید کیا جائے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ حالیہ طوفانی بارشوں اور سیلابی ریلے کے دوران خراب ہونیوالی مونجی اور کپاس کی فصلات کو کسان پیکج کے تحت معاوضہ کی ادائیگی کے وقت جانبداری سے کام لیا گیا جس کی وجہ سے اکثر متاثرہ کاشتکار امداد سے محروم رہ گئے۔ بعد ازاں کسانوں کے نمائندہ وفد نے ڈی سی او خوشاب کو ایک عرضداشت پیش کی جس میں بتایا گیا ہے کہ ہڈالی‘ کا علاقہ 34ہزار ایکڑ رقبہ پر مشتمل ہے اور زرعی رقبہ کے لحاظ سے اسے ضلع خوشاب میں اولیت حاصل ہے لیکن کسان پیکج کے تحت ہڈالی اور بولہ کے کسی کسان کو ریلیف نہیں ملا جو سرا سر ناانصافی اور متاثرین کی حق تلفی ہے۔ عرضداشت میں متاثرین کی میرٹ پر لسٹیں مرتب کرنے اور اُنھیں کسان پیکج سے مستفید کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔
;
کسان بھی باہر نکل آئے کسان بھی باہر نکل آئے Reviewed by Khushab News on 8:03:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.