چوروں کو کھلی چھٹی ، پولیس بے بس


خوشاب نیوز ڈاٹ کام)وادی سون کے گاؤں سورکی اور دامن مہاڑ کے گاؤں چوہا میں یکے بعد دیگرے ہونیوالی ڈکیتی کی پندرہ وارداتوں میں ڈاکو ایک کروڑ روپے سے زائد مالیت کے طلائی زیورات اور نقدی لوٹ کر فرار ہو گئے‘ مسلح ڈاکو رات کی تاریکی میں سورکی کے نواحی علاقہ ڈھوک مانگے والی میں محمد اکرم‘ ولی محمد ‘ امیر افضل اور سعید احمد سمیت آٹھ افراد کے گھروں میں داخل ہوئے اور اہل خانہ کو اسلحہ کی نوک پر یرغمال بنا کر گھروں میں موجود طلائی زیورات و نقدی چھین لی‘ بعد ازاں ڈاکوؤں کا یہ خطرناک گروہ موضع چوہا کے علاقہ کالی بیر میں حاجی دوست محمد ‘ عمر دراز‘ خالقداد اور عبداﷲ سمیت سات افراد کے گھروں میں گھس گیا اور وہاں سے اسلحہ کی نوک پر نقدی و زراعت لوٹنے کے بعد فرار ہو گیا۔ لوٹنے جانیوالے زیورات و نقدی کی مالیت ایک کروڑ روپے سے زائد بتائی جاتی ہے پولیس نے ان سنگین وارداتوں کی اطلاع ملنے کے بعد ابھی تک کسی ایک واردات کا بھی مقدمہ درج نہیں کیا۔ جس کی وجہ سے پورے علاقہ میں خوف و ہراس اور عدم تحفظ کا احساس پایا جاتا ہے۔ متاثرین نے اس صورتحال پر شدید احتجاج
کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ڈاکوؤں کے اس خطرناک گروہ کی گرفتاری کیلئے پولیس کو حرکت میں لایا جائے اور ڈکیتی کی ان سنگین وارداتوں کے مقدمات کا اندراج یقینی بنایا جائے۔ متاثرین کا کہنا ہے کہ پولیس نے ابھی تک اُن کی داد رسی کیلئے موقع واردات کو دیکھنے کی زہمت بھی گوارہ نہیں کی۔ دریں اثنا نوشہرہ وادی سون سے نمائندہ خصوصی کے مطابق موضع سورکی کے بعد چوروں نے موضع انگہ میں چوری کی متعدد گھروں سے سامان لے گئے اہل محلہ کے جاگ جانے کے بعد آبادی کے باہر کھیتوں میں چھوڑ کر بھاگ گئے جبکہ ماسٹر محمد شبیر،اشفاق قریشی،محمد ناصر دھوسی اور مہر محمد کے گھروں سے نقدی ،طلائی زیورات چرا کر لے گئے میں ان چوری کی وارداتوں سے علاقے میں خوف وہراس پھیلا ہوا ہے بتایا گیا ہے کہ اس قبل موضع انگہ اوگالی،کوٹلی روذ پر ڈکیتی کی کئی وارداتیں ہوچکی ہیں جنکا ابھی تک سراغ نہیں لگایا جاسکا اہل علاقہ نے ڈی پی او خوشاب سے مطالبہ کیا ہے کہ پولیس کے گشت نظام کو موثر بنایا جائے۔
;
چوروں کو کھلی چھٹی ، پولیس بے بس چوروں کو کھلی چھٹی ، پولیس بے بس Reviewed by Khushab News on 9:45:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.