میونسپل کمیٹی نوشہرہ کے سیاسی منظر نامے میں یو ٹرن


خوشاب نیوز ڈاٹ کام) مسلم لیگ ن کے عہدیداران کے استعفی کی وجہ سےمیونسپل کمیٹی نوشہرہ میں بلدیاتی انتخابات میں یکسر تبدیل ہوکر رہ گئی ہے اور بدلی ہوئی صورتحال میں پی ٹی آئی کا پلڑا بھاری نظر آنے لگا ہے۔کیونکہ پہلے مسلم لیگ ن میونسپل کمیٹی نوشہرہ سے اکژیت میں جیت رہی تھی لیکن استعفوں کے بعد صورتحال تبدیل ہو گئی میونسپل کمیٹی نوشہرہ میں وارڈ نمبر 1میں مسلم لیگ ن کے امیدوار جنرل کونسلرملک شوکت ردھنال ،پی ٹی آئی ملک زاہد لاہڑی اور دو آزاد امیدوار ملک اصغر اور استعفوں کے بعد مسلم لیگ ن کے باغی امیدوار ملک ساجد صدیق چیگی نے بھی آزاد الیکشن میں حصہ لینے کا اعلان کر دیا جسکی وجہ اب مسلم لیگ ن کو نقصان ہو سکتا ہے اور یہ فائدہ آزاد امیدوار ملک اصغر کو پہنچ رہا ہے ۔وارڈ نمبر 2میں مسلم لیگ ن کے امیدوار ملک محبوب ،پی ٹی آئی ملک شیر زمان ،عوامی تحریک ملک غلام جیلانی اور آزاد امیدوار ملک یعقوب ایڈووکیٹ ہے یہاں پر مسلم لیگ ن کے امیدوار اچھی پوزیشن میں ہے ۔وارڈ نمبر3میں مسلم لیگ ن ملک عمران ،پی ٹی آئی رانا خالد مسعود اور آزاد امیدوار ملک تصور ہیں یہاں پر پی ٹی آئی بہت مظبوط ہیں ۔وارڈ نمبر 4میں ون ٹوون مقابلہ ہے مسلم لیگ ن ملک امتیازاور پی ٹی آئی کے ملک ریاض بھاء ہے یہاں پر بھی مسلم لیگ ن جیت سکتی ہے۔وارڈ نمبر 5مسلم لیگ ن احمد نواز اور پی ٹی آئی محمد یوسف ہے یہاں پر پی ٹی آئی کاچانس ہے ۔وارڈ نمبر 6مسلم لیگ ن محمد یعقوب،پی ٹی آئی ،کرنل اظہر ،ساول گروپ حافظ محمد حسین ہے اس وارڈ میں مسلم لیگ ن اور ساول گروپ کا مقابلہ ہے جو زیادہ تر چانس ساول گروپ کے ہیں کہ وہ کامیاب ہو گے۔وارڈ نمبر 7مسلم لیگ ن سابقہ چئیرمین ملک حاکم خان اور پی ٹی آئی ملک سجاول خان کے مابین ون ٹو ون مقابلہ ہو ہے جو کہ دونوں امیدوار ففٹی ففٹی ہے ۔وارڈ نمبر 8میں مسلم لیگ ن ملک منظور اور ملک آصف شاہین اعوان جو کہ ابھی تک یہ فیصلہ نہیں کر سکے کہ وہ آزاد الیکشن میں حصہ لیں گے یا پی ٹی آئی کے امیدوار ہوں گے لیکن اس وارڈ میں سابقہ ضلعی چئیرمین ملک غلام محمد اعوان کی ملک آصف شاہین کو مکمل حمایت حاصل ہے کانٹے دار مقابلے کی توقع کی جا سکتی ہیں لیکن ملک منظور نے ملک آصف شاہین کے خلاف ہائی کورٹ لاہور میں درخواست بھی دی ہوئی ہے کہ انھوں نے وارڈ نمبر 9میں کاغذات نامزدگی جمع کروائے تھے وہاں ووٹ نہ ہونے کی صورت میں وارڈ نمبر 8میں الیکشن لڑ رہے ہیں جبکہ وہ فیس وارڈ نمبر 9میں جمع کروا چکے ہیں اس وارڈ کا فیصلہ لاہور ہائی کورٹ کے بعد ہی کلئیر ہو گا ۔وارڈ نمبر 9 میں پیر عثمان شاہ بلا مقابلہ امیدوار تھے کیونکہ وہاں جو امیدوار تھے انکے ووٹ وارڈ نمبر 8میں تھے لیکن عثمان شاہ نے اپنے اثاثے صفر لکھے ہیں جبکہ وہ بہت سے اثاثوں کے مالک تھے ان کے خلاف بھی لاہور ہائیکورٹ میں دائر کر رکھی ہے وہ بھی فیصلہ آئے گا تو پتا چلے گا ۔وارڈ نمبر 10مسلم لیگ ن محمد ندیم،پی ٹی آئی محمد اعجاز قریشی اور دو آزاد امیدوار مسعودانصاری،اظہر اعوان ہے اس وارڈ میں پی ٹی آئی کا امیدوار مظبوط نظر آ رہا ہے ۔وارڈ نمبر 11مسلم لیگ ن چوہدری عنایت اللہ،پی ٹی آئی ملک صاحب خان کھٹڑ،عوامی تحریک محمد طاہر گھنال ہے اس وارڈ میں پی ٹی آئی ملک صاحب خان کھٹڑ مظبوط امیدوار ثابت ہو سکتے ہیں۔وارڈ نمبر 12مسلم لیگ ن ملک محمد خان ،پی ٹی آئی حافظ نثار،محمود گروپ ملک بلال کھٹڑ ہے اس وارڈ میں مسلم لیگ ن کے امیدوار بہت مظبوط ہیں ۔واضح رہے کہ میونسپل کمیٹی نوشہرہ میں استعفوں کے بعد مسلم لیگ ن کو بہت بڑا نقصان ہوا اب پی ٹی آئی مظبوط بن چکی ہیں ۔
نوٹ : مندرجہ بالا تجزیہ مختلف مقامی افراد کی آرا سے اخذ کیا گیا ہے، ادارہ کا اسکے مندرجات سے کلی یا جزوی اتفاق ضروری نہیں
;
میونسپل کمیٹی نوشہرہ کے سیاسی منظر نامے میں یو ٹرن میونسپل کمیٹی نوشہرہ کے سیاسی منظر نامے میں یو ٹرن Reviewed by Khushab News on 7:58:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.