اوچھالی سے چھٹی؟


خوشاب نیوز ڈاٹ کام) یونین کونسل اوچھالی میں شیر بُری طرح پھنس گیااور ساتھ ایم پی اے ملک جاوید کی یونین کونسل اوچھالی سے چھٹی بھی ہو گئی ۔تفصیلات کے مطابق یونین کونسل اوچھالی میں تین گروپ آمنے سامنے ہے پہلا گروپ مسلم لیگ ن کے امیدوارچئیرمین حاجی امجد ہے جن کو داکٹر ناصر گروپ کی مکمل حمایت حاصل ہے ،دوسرا گروپ شیر زمان گروپ کے امیدوار چئیرمین ملک غلام حسین یرال ہے جنکو ملک عمر اسلم اعوان گروپ کی مکمل حمایت حاصل ہے اور تیسرا گروپ 

آزاد امیدوار چئیرمین حاجی فتح خان کاہو ہے جو کہ پہلے مسلم لیگ ن کے اوچھالی یونین کونسل سے صدر تھے ۔مسلم لیگ ن نے حاجی امجد کو ٹکٹ دیکر بہت بڑی غلطی کی اور یونین کونسل اوچھالی کی جیتی ہوئی سیٹ کو ہاتھوں سے نکال دی ہے۔یونین کونسل اوچھالی میں آزاد امیدوار حاجی فتح خان کاہو نے بہت سے ترقیاتی کام کروائے ہے جنکی وجہ سے عوام انکی بھرپور سپوٹ کر رہی ہے اور اسکے بعد وہ مظلوم بھی بن چکے ہے کہ مسلم لیگ ن نے ٹکٹ نہ دیکر نا انصافی کی ہے ۔حاجی امجد کو مسلم لیگ ن نے ٹکٹ دیکر ناصرف بلدیاتی انتخابات میں نقصان کروایا بلکہ ایم پی اے ملک جاوید اعوان کی یونین کونسل اوچھالی سے چھٹی بھی ہو گئی کیونکہ ڈاکٹر ناصر جنرل الیکشن میں ایم پی اے کے امیدوار بھی ہو سکتے ہے اور ایم پی اے جاوید کا ساتھی حاجی فتح خان کاہو بھی ساول گروپ کو جوائن کر چکا ہے ۔سیاسی صورتحال یونین کونسل اوچھالی کی یہ ہے کہ اصل مقابلہ ملک غلام حسین یرال اور حاجی فتح خان کاہو کا ہے اور دونوں کے ففٹی ففٹی چانس ہے جبکہ مسلم لیگ ن حاجی امجد تیسرے نمبر پر ہے ۔مسلم لیگ ن اگر اوچھالی یونین کونسل اوپن کر دیتی تو یقیناًجنرل الیکشن میں انکو اتنا نقصان نہ اٹھانا پڑتا جتنا اب اٹھا رہے ہیں ;
اوچھالی سے چھٹی؟ اوچھالی سے چھٹی؟ Reviewed by Khushab News on 10:33:00 PM Rating: 5

2 تبصرے:

  1. اگر عمر اسلم کی حمایت تھی تو پی ٹی آئی کا ٹکٹ کیوں نہ لیا

    جواب دیںحذف کریں
  2. اگر عمر اسلم کی حمایت تھی تو پی ٹی آئی کا ٹکٹ کیوں نہ لیا

    جواب دیںحذف کریں

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.