میرے محترم اب مان بھی جاو



خوشاب نیوزڈاٹ کام)پنجاب اسمبلی کے رُکن ملک محمد وارث کلو نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے لارجر بینچ کی جانب سے حلقہ پی پی 42 کی ری کاؤنٹنگ کے حوالے سے دیئے گئے حالیہ فیصلہ نے پاکستان مسلم لیگ ن کو ملنے والے عوامی مینڈیٹ پر مہر تصدیق ثبت کر دی ہے۔اب میرے حلقہ انتخاب میں مخالفین کو کسی بھی سطح پر پذیرائی نہیں مل سکتی۔ پانچ دسمبر کو ہونیوالی بلدیاتی معرکہ آرائی سمیت ہر انتخابی میدان میں اس علاقہ سے مسلم لیگ ن کے حمایت یافتہ اُمیدوار ہی کامیابی حاصل کریں گے۔ اُنھوں نے ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ ن کے ٹکٹ ہولڈر اُمیدواروں کی انتخابی مہم کے دوران عوامی اجتماع سے خطاب کے دوران کیا۔ اُنھوں نے کہا کہ میرا سابق صوبائی وزیر ملک خدا بخش ٹوانہ کیساتھ احترام کا رشتہ تھا میں نے گذشتہ عام انتخابات میں اُسی جماعت کے پلیٹ فارم سے الیکشن لڑا جو مجھے خدا بخش ٹوانہ نے عطا کیا تھا۔ میرے انتخابی حلقہ کے مکینوں نے اپنے ضمیر کے مطابق فیصلہ کرتے ہوئے مجھے تیسری بار کامیابی سے ہمکنار کیا اور میری یہ شاندار کامیابی ٹوانہ برادران کو ناگوار گزری اور اُنھوں نے عوام کے فیصلہ کا احترام کرنے کی بجائے عذرداریوں کا سہارا لیتے ہوئے عدالتوں کے دروازوں پر دستک دی۔ اُنھوں نے کہا کہ الیکشن ٹربیونل کے بعد ہائی کورٹ اور پھر سپریم کورٹ میں بھی اُنھیں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا جس سے ثابت ہوتا ہے کہ عوامی مینڈیٹ کو کسی بھی سطح پر نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ میرے انتخابی حلقہ کے مکین میرے ساتھ ہیں اور میرا جینا مرنا اُن کیساتھ ہے۔انشاء اﷲ اپنے انتخابی حلقہ کے مکینوں کا معیارِ زندگی بلند کرنے اور اُنھیں مسائل کے گرداب سے نکالنے کیلئے اپنی موثر جدوجہد جاری رکھوں گا۔
;
میرے محترم اب مان بھی جاو میرے محترم اب مان بھی جاو Reviewed by Khushab News on 10:11:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.