یو ایس ایڈ کے تحت خواتین کے لیے پروگرام کی ورکشاپ



مٹھہ ٹوانہ(نامہ نگار) یو ایس ایڈ کے تحت چلنے والے بیٹر اینڈ سیفرفیوچر فار وومن پروگرام کے دو روزہ مشاورتی و تربیتی اجلاس کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے پراجیکٹ بیٹر اینڈ سیفرفیوچر فار وومن) (BSFWکی پراجیکٹ ڈائریکٹر میڈم رخسانہ صادق نے کہا ہے کہ یہ پروگرام ضلع خوشاب اور ضلع میانوالی کی دو دو تحصیلوں میں شروع کیا گیا ہے اور اس کا مقصدخواتین کو تعلیم و صحت، وراثت اور حق ملکیت جیسے دیگر حقوق دے کر اس کی اہمیت کا احترام دینا ہے تاکہمعاشرے میں خواتین کے ساتھ ہونے والے استحصال اور معاشرتی ناانصافیوں کی روک تھام ہو سکے ،اور ان کو برابری کی سطح پر سہولیات مہیا کی جائیں خواتین کے حقیقی مسائل جن میں سب سے اہم عدم تحفظ کا احساس ہے انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں خواتین کے خلاف جبر و تشدد کے واقعات میں روز بروز اضافہ ایک لمحہ فکریہ ہے ہم نے اس سلسلہ میں تین تحصیلوں خوشاب،نور پور تھل اور قائد آباد کی تین تین یونین کونسلز میں سروے مکمل کر لیا ہے اور ایک جامع رپورٹ تیار کر لی گئی ہے اور اس کی روشنی میں عورت کے اصل بنیادی حقوق، شخصی آزادی، حیثیت و مرتبے اور عفت و عصمت کی حفاظت کے سلسلہ میں حکومت وقت کو سفارشات بھجوائیں گے انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں خواتین کے خلاف جبر و تشدد کے واقعات میں روز بروز اضافہ ایک لمحہ فکریہ ہے اگرچہ حکومتی سطح پرخواتین کی فلاح و بہبود کے ضمن میں بے شمار دعوے کیے جاتے رہے ہیں جن میں سرفہرست پارلیمنٹ میں خواتین کی موثر نمائندگی اور حقوق نسواں پر مبنی قوانین کی منظوری و نفاذ جیسے اقدامات شامل ہیں۔ موجودہ حکومت بھی خواتین کی ترقی کو اپنے منشور کا اہم جزو قرار دیتی ہے مگر اس کے باوجود ابھی بہت سارے کام کرنا باقی ہیں عورتوں کے بارے میں ابھی مزید قانون سازی کی ضرورت ہے جس سے ہی خواتین کے ساتھ ہونے والی معاشرتی ناانصافیوں، زیادتیوں، سماجی تعصبات اور مشکلات کا حل ممکن ہے۔
;
یو ایس ایڈ کے تحت خواتین کے لیے پروگرام کی ورکشاپ یو ایس ایڈ کے تحت خواتین کے لیے پروگرام کی ورکشاپ Reviewed by Khushab News on 7:38:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.