مجوزہ قانون سےآزاد منتخب یوسی چیئرمینوں میں ہلچل




ضلع کونسل خوشاب (فائل فوٹو
خوشاب نیوز ڈاٹ کام)یونین کونسل چیئر مینوں کے انتخاب میں آزاد حیثیت سے منتخب ارکان کی حیثیت صفر ہو نے کا امکان مخصوص نشستوں کے انتخابات متناسب نمائندگی کے تحت کرائے جانے کے ممکنہ حکومتی فیصلہ کے بعد آزاد حیثیت سے منتخب ہونے والے یو سی چیئرمینوں میں بے چینی پھیل گئی ہے۔کیونکہ اس طرح آزاد ممبران کی حیثیت تقریبا نہ ہونے کے برابر رہ گئی اور انہیں جلد کسی جماعت میں شامل ہونا ہو گا۔ آزاد ممبران کو اس قانون کے تحت کوئی نشست نہیں مل سکے گی۔ ضلعی اسمبلی میں مسلم لیگ(ن) کے پاس 18ممبران ہیں جوآسانی سے 30تک پہنچ سکتے ہیں جبکہ پی ٹی آئی 11کی تعداد کو 18بنا سکتی ہے اس صورت میں مخصوص نشستوں کی بڑی تعداد (ن) لیگ کے حصہ میں آئے گی تاہم خواتین کی چار اور کسان کی ایک نشست پی ٹی آئی کو مل سکتی ہے۔ اس فیصلے کے بعد پارٹی جسے ٹکٹ دے گی وہی چیرمین منتخب ہو جائے گا۔ ایم سی خوشاب کی صورتحال بھی یہی رہے گی۔ مٹھہ ٹوانہ ،نورپورتھل ،جوہرآباداور نوشہرہ میں (ن) لیگ سویپ کرے گی اور قائدآباد میں آزاد جونسلروں کی پہلی ترجیح (ن) لیگ ہو سکتی ہے۔ ہڈالی میں پی ٹی آئی (ن) لیگ کے درمیان سخت مقابلہ ہو گا یہاں دونوں جماعتوں کی سیٹیں برابر ہیں اس فارمولا کے تحت 48یونین کونسلز میں سے 35میںپاکستان لیگ (ن) کو واضح برتری حاصل ہو جائے گی۔
;
مجوزہ قانون سےآزاد منتخب یوسی چیئرمینوں میں ہلچل مجوزہ قانون سےآزاد منتخب یوسی چیئرمینوں میں ہلچل Reviewed by Khushab News on 1:01:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.