بڑے بڑے نام بڑے بڑے دعوے مگر مٹھہ ٹوانہ ادھورے منصوبوں کا قبرستان




مٹھہ ٹوانہ ( نامہ نگار) 2015بھی گزر گیا2016سال نیا مگر مٹھہ ٹوانہ کے مسائل وہی پرانے آٹھ سال گزر گئے آدھے شہر کو سوئی گیس کی فراہمی نہ ہوئی اور نہ ہی شہریوں کو صاف پانی مل سکا طلبا ءاور طالبات کے لئے ڈگری کالجز بھی ایک خواب ہی رہے کھلاڑیوں کے لئے سپورٹس سٹیڈیم کی خواہش بھی ادھوری ہی رہی مضر صحت اور بدبو دار پانی پینے سے لوگ ہیپا ٹائٹس اور دیگر خطر ناک امراض کا شکار بنتے رہے مگر ارباب اختیار کے سر پر جوں تک نہ رینگی,شہر میں بننے والی نئی واٹر سپلائی سکیم بھی روائتی سست روی کا شکار رہی، تین سال سے زیر تعمیر آدھی کوٹ روڈ بھی مکمل نہ ہو سکی اور زیر تعمیر پلیوں پر لوگ حادثات کا شکار ہو تے رہے بہت سے نوجوان موت کے منہ میں چلے گئے اور کئی افراد عمر بھر کے لئے معذور ہو گئے،اپنی عمر پوری کرنے والی پانی کی خستہ حال ٹینکی بھی شہریوں پر خطرہ بن کے منڈلاتی رہی، اندرون شہر ٹوٹی پھوٹی سڑکیں بھی تعمیر نہ ہو سکیں شہر میں صفائی کی صورت حال تجاوزات ،و دیگر عوامی مسائل کے حل کے لئے کوئی جامع پلان نہ بن سکاشہر میں آنے والے سیلاب سے متاثرہ لوگوں کی بھی داد رسی نہ ہوئی مٹھہ ٹوانہ کے شہریوں نے 2015کو بھی شہر کے لئے ایک ناکام سال قرار دیا ہے کہ سال بھر میں کوئی بھی قابل ذکر منصوبہ جو شہریوں کے لئے فائدہ مند ہوتا شروع نہ ہو سکا 2015جاتے جاتے شہر کی نئی منتخب ہونے والی قیادت کے کندھوں پر بھاری ذمہ داری ڈال گیا اب وہ کس حد تک اس ذمہ داری کو پورا کرتے ہیں یہ تو وقت ہی بتائے گا 
;
بڑے بڑے نام بڑے بڑے دعوے مگر مٹھہ ٹوانہ ادھورے منصوبوں کا قبرستان بڑے بڑے نام بڑے بڑے دعوے مگر مٹھہ ٹوانہ ادھورے منصوبوں کا قبرستان Reviewed by Khushab News on 8:34:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.