سیکرٹری سوشل ویلفیر کی ضلع خوشاب کے سکولوں کو سیکورٹی انتظامات بہتر بنانے کی ہدائت


خوشاب نیوز ڈاٹ کام)سیکریٹری سوشل ویلفیئر پنجاب ہارون رفیق نے ضلع خوشاب کے مختلف سکولوں اور ڈی ایچ کیو ہسپتال کا ہنگامی دورہ کیا - سیکیورٹی کے انتظامات اور حکومت کے دیئے گئے احکامات اور ہدایات پر عملدرآمد کا جائیزہ لیا - ان کے ہمراہ ڈی سی او خوشاب ضیاءالرحمن اور ای ڈی اور (سی ڈی) نبیلہ ملک اور ڈی آئی او تابندہ امجد بھی موجود تھیں - سیکرٹری سوشل ویلفیئر نے سب سے پہلے گورنمنٹ گرلز ہائی سکول جوہر آباد کا معائینہ کیا -ایمر جنسی سائرن سیکیورٹی پلان اور سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب اور چار دیواری کا جائیز ہ لیا -سکول کی پرنسپل حنا ناز نے برےفنگ دیتے ہوئے سیکرٹری کو بتایا کہ سیکیورٹی کے حوالے سے تمام تر انتظامات حکومت پنجاب کی ہدایات کے مطابق تشکیل دیئے گئے ہیں اور اس سلسلے میں اب تک 3 عددموک ایکسرسائزز بھی ہو چکی ہیں سیکرٹری سوشل ویلفیئر پنجاب نے اس سکول میں ایک عدد سی سی ٹی وی کیمرہ اور لگانے کی ہدایت کی - اس کے بعد سیکرٹر ی سو شل ویلفیئر ہارون رفیق ڈی پی ایس سکول گئے - سکول کے پرنسپل ہدایت اللہ نیازی نے سکول کی فول پروف سیکیورٹی کے انتظامات کا معائینہ کروایا - انہوں نے بتایا کہ سکول کی ایک دیوار ہالیہ بارشوں سے متاثرہوئی تھی - جو کہ اب دو بارہ تعمیر کی جا چکی ہے - سی سی ٹی وی کیمرے بھی ایکٹو ہیں۔ انہوں نے سکول کی سیکیورٹی انتظامات کا جائیزہ لیا اور اطمینان کا اظہار کیا - اس کے بعد سیکرٹری سوشل ویلفیئر نے ڈی ایچ کیو ہسپتال کا معائینہ کیا وہاں پر ایم ایس ڈی ایچ کیو ہسپتال نذر حیات مجوکہ اور ڈی او ہیلتھ ڈاکٹر آصف قاضی نے ہسپتال میں ایمر جنسی وارڈ، بچہ وارڈ، دل وارڈ آوٹ ڈور کی وزٹ کروائی سیکرٹری سوشل ویلفیئر نے ادویات کا سٹاک اور ترسیل کا بھی جائیزہ لیا اور ڈی ایچ کیو جوہرآبادمیں طبی سہولتوں کا جائیزہ لیا - انہوں نے کہا ڈی ایچ کیو میں دوسرے اضلاع کی طرح کچھ مسنگ فسلٹیزہیں جن کو حکومت پنجاب ترجیہی بنیادوں پر پورا کرنے کا عزم رکھتی ہے اور تعلیم و صحت کے میدان میں حکومت بہت سنجیدہ ہے اور عوامی خدمت کے زیادہ سے زیادہ کام کرنا چاہتی ہے -
اشتہار

;
سیکرٹری سوشل ویلفیر کی ضلع خوشاب کے سکولوں کو سیکورٹی انتظامات بہتر بنانے کی ہدائت سیکرٹری سوشل ویلفیر کی ضلع خوشاب کے سکولوں کو سیکورٹی انتظامات بہتر بنانے کی ہدائت Reviewed by Khushab News on 9:54:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.