حکومت پنجاب کے ہر بچے کو تعلیم کے لیے پُر عزم ہے، آصف بھا



خوشاب نیوز ڈاٹ کام) صوبائی وزیر جنگلات ملک محمد آصف بھاءنے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب صوبہ بھر میں تعلیم کوسو فیصد عام کرنے اور چائلڈ لیبر کے خاتمے کے لئے پر عزم ہیں اسی لئے انہوں نے صوبہ بھر میں جو بچے سکول گوئنگ ایج میں ہیں انہیں سکول بھیجنے کی تعلیمی ایمرجنسی نافذ کر دی ہے اسی لئے انکے احکامات کو ہر صورت میں عملی جامہ پہنایا جائے گا - صوبائی وزیر گورنمنٹ ایلی منٹری سکول نمبر4 بلاک نمبر ا جوہرآباد میں بچوں کے داخلہ مہم کی ا یک افتتاحی تقریب سے خطاب کر رہے تھے - تقریب میں ای ڈی او ایجوکیشن عطاءاللہ شاہ ،ڈی او ایجوکیشن سیکنڈری شیخ اعجازالحق ،ڈی ڈی او ایجوکیشن خوشاب طارق حبیب ، اے ای اوز ،ہیڈ ماسٹر ز ،اساتذہ اور طالب علموں نے شرکت کی - صوبائی وزیر آصف بھا ءاس تقریب کے مہمان خصوصی تھے -انہوں نے افتتاحی تقریب میں نئے بچوں کی انر ولمنٹ کے موقع پر بچوں کو یونیفارم اور کتابیں دیں -صوبائی وزیر نے ڈی ڈ ی ا و ایجوکیشن کی جانب سے ڈی ڈی اوز کے نئے دفاتر کی تعمیر اس کی رہائش گاہیں ،سکول ہذا کا اسمبلی گراﺅنڈ میںٹف ٹائل لگوانے اور پلے گراﺅنڈ کی دستیابی کے مطالبات پر غور کرنے کا وعدہ کیا -تقریب میں بتایا گیا کہ سکول ہذا کو ایس این ای پروگرام کے تحت اس مالی سال کے آخر تک ہائی کا درجہ بھی مل جائیگا-صوبائی وزیر نے تقریب میں بتایا کہ ضلع میں ان کے انتخاب کے بعد انہوں نے تعلیم کے شعبہ کو زیادہ ترجیح دی اور ان کی کوششوں سے متعدد سکولوں کی اپ گریڈ یشن اور فنی اداروں کا قیام عمل میں آیا - قبل ازیں ڈی ڈی او ایجوکیشن طارق حبیب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پنجاب کے احکامات کی روشنی میں تحصیل خوشاب سے داخلہ مہم کا آغاز کیا جارہا ہے اور اس مہم کے دور ان تیس ہزاربچوں کو مختلف سکولوں میں داخل کروایا جائیگا -طارق حبیب نے بتایا کہ اسی سکول کے جماعت ہشتم کے ایک طالب علم ذوالفقار علی نے ضلعی سطح پر تھرڈ پوزیشن لے کر سکول اور ضلع کا نام روشن کیا -انہوں نے کہا کہ اس ادارہ کی بہترین تعلیمی کارکردگی کی بناءپر متعدد بچے پرائیویٹ سکولوں کو چھوڑ کر اس سکول میں داخلہ کے لئے آرہے ہیں -تقریب میں نمایاں پوزیشن ہولڈ رذ والفقار علی کو صوبائی وزیر نے انعام بھی دیا -
اشتہار

;
حکومت پنجاب کے ہر بچے کو تعلیم کے لیے پُر عزم ہے، آصف بھا حکومت پنجاب کے ہر بچے کو تعلیم کے لیے پُر عزم ہے، آصف بھا Reviewed by Khushab News on 5:56:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.