آصف بھا سے خصوصی مطالبہ


 نوشہرہ وادی سون سے نمائندہ خصوصی فرحان فاروق اعون کی رپورٹ
 خوشاب نیوز ڈاٹ کام)وادی سون کے سرکاری وغیر سرکاری جنگلات کی بہتری کیلئے مربوط منصوبہ بندی اور وسائل کی فراہمی بے حد ضروری ہے یہاں کی مختلف سماجی تنظیموں کے نمائندوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وادی سون سکیسر کے جنگلات جو کہ 88000ایکڑ رقبہ پر پھیلے ہوئے ہیں وادی سون کے مجموعی رقبے کا40فیصد ہیں وادی سون کے جنگلات خوبصورتی کے علاوہ مال مویشی کیلئے چراہ گاہ جبکہ زیر زمین پانی کے ذخائر کو برقرار رکھ کر زراعت کے ذریعے مقامی لوگوں کو روزگار فراہم کر رہے ہیں ہمارا یہ قدرتی وسیلہ اور اثاثہ پچھلے کئی سالوں سے تباہی کی طرف گامزن ہے سرکاری جنگلات سے کاہو اور پھلاہی کے درخت بے دریغ کاٹے جارہے ہیں اور ہر سال سینکڑوں ایکڑ رقبہ آتشزدگی کی نذر ہو جاتا ہے محکمہ جنگلات کا تحٖفظ کا نظام ناکافی عملے ،کرپشن اور مافیا کے ساتھ مل کر رہی سہی کسر پوری کر رہا ہے جنگلات سے 60فیصد کاہو اور پھلاہی کے درختوں کا صفایا ہو چکا ہے جبکہ محکمہ جنگلات نے انکے تحٖفظ میں مقامی لوگوں یا گاؤں کے لوگوں کو شامل کرنے کی کوئی کوشش نہیں کی جبکہ محکمہ جنگلات کا ورکنگ پلان 25سال پہلے ختم ہو چکا ہے اور نہ ہی تو نیا ورکنگ پلان بنایا گیا ہے اور نہ ہی ان جنگلات تحفظ،شجرکاری،آتشزدگی اور انکی بہتری کیلئے پچھلے 25سالوں میں کوئی منصوبہ شروع کیا گیا ہے یہ صورتحال علاقے کو ماحولیاتی طور تباہ کر رہی ہے اور علاقے کی زرعی معیشت ،زیر زمین پانی کے ذخائر جنگلی حیات ،قدرتی بوٹیاں ،کاہو اور پھلائی کے درخت ،علاقے کا موسم اور سیاحت بری طرح متاثر ہو رہے ہیں انہوں نے صوبائی وزیر جنگلات وسیکریٹری جنگلات پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر دفعہ 144نافذ کیا جائے اور تمام پرمنٹ منسوخ کئے جائیں ۔
  khushabnews
  khushabnews
آصف بھا سے خصوصی مطالبہ آصف بھا سے خصوصی مطالبہ Reviewed by Khushab News on 7:24:00 PM Rating: 5

No comments:

loading...
Powered by Blogger.