’’جشن آزادی اور عصر حاضر کے تقاضے‘‘



خوشاب نیوز ڈاٹ کام)محکمہ کمیونٹی ڈویلپمنٹ اور ضلعی حکومت کے تعاون سے ڈسٹرکٹ پریس کلب جوہرآباد میں ’’جشن آزادی اور عصر حاضر کے تقاضے‘‘ کے عنوان سے عظیم الشان سیمینار کا انعقاد کیاگیا ‘ سیمینار کی صدارت ڈی سی او کنزہ مرتضیٰ نے کی جبکہ سینیٹر ڈاکٹر غوث محمد نیازی اور قومی اسمبلی کے رُکن ملک شاکر بشیر اعوان نے بطور مہمانانِ خصوصی شرکت کی۔ اس موقع پر ای ڈی او کمیونٹی ڈویلپمنٹ عبدالحمید سنبل ور معززین علاقہ کی بڑی تعداد موجود تھی۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ڈی سی او کنزہ مرتضیٰ نے کہا کہ یہ ملک ہمارے آباؤ اجداد نے لازوال قربانیاں دیکر حاصل کیا اس کا مستقبل روشن اور تابناک بنانے کیلئے ضروری ہے کہ نئی نسل کی کردار سازی پر توجہ دی جائے اور اُنھیں تحریک آزادی کے دوران دی جانیوالی اسلاف کی قربانیوں سے آگاہ کیا جائے۔ اُنھوں نے تعلیمی اداروں کو فعال بنانے اور وہاں زیر تعلیم طلباء و طالبات کی تعلیم و تربیت پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت پر زور دیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن ضلع خوشاب کے صدر سینیٹر ڈاکٹر غوث محمد نیازی نے کہا کہ قومون کی ترقی و خوشحالی میں احتساب کے عمل کو کلیدی حیثیت حاصل ہے انتخابات احتساب کا بہترین ذریعہ اور عوام بہترین محتسب ہیں اگر حکمرانوں کی اپنے عرصہ اقتدار کے دوران کارکردگی اچھی ہو گی تو عوام اُنھیں انتخابات کے ذریعے دوبارہ منتخب کریں گے بصورت دیگر ووٹ کی پرچی کے ذریعے اُن کا احتساب ہوگا اُنھوں نے بتایا کہ میں نے سینٹ میں کالا باغ ڈیم کی تعمیر کے حوالے سے آواز اٹھائی تو تمام سیاسی جماعتوں نے اسکی مخالفت کی بعد ازاں میں اُن سے فرداً فرداً ملا اور اُنھیں اس اہم منصوبے کی افادیت سے آگاہ کیا اُنھوں نے کہا کہ انشاء اﷲ کالا باغ ڈیم پر سب کے تحفظات دور ہونگے اور یہ ڈیم ضرور بنے گا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے قومی اسمبلی کے رُکن ملک شاکر بشیر اعوان نے کہا کہ آئین کی بالادستی عصر حاضر کا اولین تقاضہ ہے‘ ارض وطن پر غریبوں اور امیروں کو یکساں انصاف ملنا چاہیے اُنھوں نے کہا کہ یہ ملک مجاہدین آزادی کی انتھک محنت اور جدوجہد کا ثمر ہے کسی وطن دشمن کو بیرونِ ملک بیٹھ کر پاکستان کی سالمیت کیخلاف سازشیں کرنے اور پاکستان مخالف نعرے لگانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ گورنمنٹ پوسٹ گریجوایٹ کالج جوہرآباد کے پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر فتح محمد ملک نے اپنے خطاب میں تحریک آزادی اور قیام پاکستان کے اغراض و مقاصد پر تفصیلی روشنی ڈالی اُنھوں نے کہا کہ جب پاکستان معرض وجود میں آیا تو اس کی آبادی صرف تین کروڑ تھی آج 70برس گزرنے کے بعد یہ آبادی 20کروڑ تک پہنچ چکی ہے ہمارے وسائل وہی ہیں جو اتنی بڑی آبادی کی ضرورت پوری نہیں کرتے۔ اُنھوں نے وسائل اور آبادی میں تناسب پیدا کرنے کیلئے آبادی کے عفریت پر قابو پانے کی ضرورت پر زور دیا۔ اُنھوں نے کہا کہ بیروزگاری کے خاتمہ کیلئے فنی تعلیم کو فروغ دیکر نوجوانوں کو ہند مند بنایا جائے تاکہ وہ فارغ التحصیل ہونے کے بعد باعزت انداز میں روزگار کما سکیں اور ملک کی ترقی و خوشحالی کے عمل کا حصہ بن جائیں۔ پنجاب بار کونسل کے رُکن اور سینئر قانون دان ملک حبیب نواز ٹوانہ ایڈووکیٹ نے اپنے خطاب میں کہا کہ یہ ملک ایک قانون کی جدوجہد سے معرض وجود میں آیا قائداعظم محمد علی جناح نے آزادی کا کیس اس خوبصورت انداز میں لڑا کہ انگریز ملک چھوڑنے پر مجبور ہو گئے۔ یہ ملک ہمارے پاس آباؤ اجداد کی امانت ہے اس کی بقاء اور سالمیت کیلئے ہر محب وطن شہری کو اپنے حصے کا کردار ادا کرنا ہوگا۔ پنجاب بار کونسل کے سابق رُکن حافظ خان محمد ماہل ایڈووکیٹ سپریم کورٹ نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج ہمیں وہ پاکستان نظر نہیں آتا جو بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح نے ہمیں دیا تھا ہمارے ملک کا بڑا حصہ ہم سے الگ ہو چکا ہے بنگلہ دیش میں پاکستان کے حامیوں کو پھانسیاں دی جا رہی ہیں لیکن ارض وطن پر ملک توڑنے کی سازشیں کرنے اور پاکستان مردہ باد کے نعرے لگانے والے آزاد پھر رہے ہیں ان کے خلاف قانون کی لاٹھی حرکت میں نہیں آتی۔ اُنھوں نے کہا کہ جو قومیں ناموسِ وطن کی حفاظت نہیں کر سکتیں 
اس خبر کو بھی پڑھیں: ضلع کونسل خوشاب مخصوص نشستیں کتنی اور کون کون امیدوار
صفحہ ہستی سے مٹ جایا کرتی ہیں ہمیں نظریہ پاسکتان کے تحفظ کیلئے کسی بھی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کرنا چاہیے۔ نوجوان قانون دان ملک ریحان ماہل ایڈووکیٹ نے اپنے خطاب میں کہاکہ ہم نے قربانیاں دیکر آزاد ملک حاصل کیا لیکن آج ہمارے ملک کو گالیان دی جا رہی ہیں اور ہم خاموش ہیں آزادی کا تقاضہ یہ ہے کہ محمود و ایاز ایک ہی صف میں کھڑے ہوں۔ قبل ازیں خطبہ استقبالیہ پیش کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ پریس کلب جوہرآباد کے صدر نے اس عظیم الشان سیمینار کے انعقاد کیلئے تعاون کرنے پر محکمہ کمیونٹی ڈویلپمنٹ اور ضلعی حکومت کا شکریہ ادا کیا اس موقع پر ممتاز شعرائے کرام ڈاکٹر بدر منیر ‘ شوکت بھٹی اور عطا محمد عباسی نے جشن آزادی کے حوالے سے اپنا اپنا کلام پیش کیا ‘ سیمینار میں نقابت کے فرائض ڈسٹرکٹ پریس کلب کے چیف الیکشن کمشنر چوہدری ارشد محمود ایڈووکیٹ نے سرانجام دیئے۔

khushabnews
;
’’جشن آزادی اور عصر حاضر کے تقاضے‘‘  ’’جشن آزادی اور عصر حاضر کے تقاضے‘‘ Reviewed by Khushab News on 6:54:00 AM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.