غیر جانبدارنہ صحافت مشکل ہوگئی



خوشاب نیوز ڈاٹ کام)سی پی ڈی آئی کے زیر اہتمام مقامی ہوٹل میں صحافیوں کی تربیتی ورکشاپ منعقد ہوئی‘ جس میں جوہرآباد‘ خوشاب‘ نورپورتھل اور نوشہرہ کے الیکٹرانک و پرنٹ میڈیا کے ارکان نے شرکت کی۔ تربیتی ورکشاپ میں صحافیوں کو درپیش خطرات اور فرائض کی ادائیگی میں حائل رکاوٹوں کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور اُن سے محفوظ رہنے کیلئے مختلف تجاویز پر غور و خوض کیا گیا۔ شرکائے ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے سی پی ڈی آئی کے ٹرینر اعزاز سید نے کہا کہ موجودہ دور میں غیر جانبدارانہ اور آزادانہ صحافت نہ صرف مشکل ہو چکی ہے بلکہ وطن عزیز میں یہ پیشہ ہی انتہائی خطرناک صورتحال اختیار کر چکا ہے۔ پاکستان دُنیا بھر میں صحافیوں کیلئے غیر محفوظ ترین ممالک میں شامل ہے۔ جہاں گزشتہ دہائی میں 119صحافی شہید ہوئے‘ ٹرینر فیصل منیر نے اپنے خطاب میں کہاکہ میڈیا جمہوریت اور استحکام لانے والی ایک طاقت ہے کیونکہ عوام کو 
اس خبر کو بھی پڑھیں :سینئر صحافی طالب بھٹی کی ٹانگیں توڑ دی گئیں
معلومات تک رسائی دے کر جمہوری اور آزاد معاشرے کے قیام میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ اُنھوں نے کہا کہ صحافیوں کو اپنی ذمہ داریاں سرانجام دیتے وقت ملکی قوانین ‘ صحافتی اصولوں اور غیر جانبداری کو ہر صورت میں ملحوظِ خاطر رکھنا چاہیے تاکہ معاشرے کی اصلاح کیلئے موثر کردار ادا ہو سکے ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے ٹریننگ کوآرڈینیٹر الطاف چغتائی نے کہا کہ ضلع خوشاب میں پہلی بار کسی تنظیم نے صحافیوں کی تربیتی ورکشاپ منعقد کی ہے دیگر تنظیموں کو بھی چاہیے کہ وہ ایسی ہی ورکشاپ کا انعقاد کریں۔ ورکشاپ میں بتایا گیا کہ سی پی ڈی آئی ملک کے چاروں صوبوں میں پندرہ سو سے زائد صحافیوں کو ٹریننگ فراہم کرے گی۔ ورکشاپ کے انعقاد پر سی پی ڈی آئی کی جانب سے صحافیوں کے اعزاز میں ظہرانہ بھی دیا گیا۔

khushabnews
غیر جانبدارنہ صحافت مشکل ہوگئی غیر جانبدارنہ صحافت مشکل ہوگئی Reviewed by Khushab News on 6:33:00 AM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.