پی ٹی آئی نے سنگھا کو ووٹ دینےوالوں کی رکنیت کیوں معطل نہیں کی



خوشاب نیوز ڈاٹ کام)تحریک انصاف کی پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف کارروائی میں تیزی ۔خوشاب سے مجموعی طور پر 10 افراد کی بنیادی پارٹی رکنیت معطل سابق ضلع ناظم احسن ٹوانہ بھی ایکشن کی زد میں آتے ہوئے پارٹی کی بنیادی رکنیت سے محروم ۔معطلی کا حکمنامہ ریجنل صدر عامر محمود کیانی کی جانب سے جاری کیا گیامتعدد یونین کونسلز کے چیئرمینز بھی معطل ہونے والوں میں شامل ۔معطل ہونے والوں میں صفدر اعوان، رضا خان، حسن سلہال، عظمت عباس اور منصب ڈھوری شامل علی حسین، جاوید عالم سگو، معروف لال اور احسان قادر مجوکا کی بنیادی پارٹی رکنیت بھی معطل ان تمام افراد پر بلدیاتی انتخابات کے آخری مرحلے میں پارٹی نظم و ضبط کی خلاف ورزی کا الزام ہے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے پارٹی نظم کیخلاف جانے والوں کو پارٹی سے نکال دینے کا اعلان کر رکھا ہے۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ ضلع خوشاب میں پی ٹی آئی کے مجموعی طور پر 14ممبران ضلع کونسل ہیں جن میں سے گیارہ نے چیئرمین ضلع کونسل کے انتخابات میں سمیرا ملک کو ووٹ دیا تھا جبکہ تین نے امیر حیدر سنگھا کو ووٹ دیا تھا۔ احسان ٹوانہ کی قیادت میں سمیرا ملک کو ووٹ دینے والے دس ممبران ضلع کونسل کی پارٹی رکنیت معطل کردی گئی ہے اور انہیں پی ٹی آئی سے نکالا بھی جاسکتا ہے۔سیاسی و عوامی حلقوں میں یہ سوال زیر گردش ہے کہسمیرا ملک کو ووٹ دینے والے گیارہ میں دس کی تو پارٹی رکنیت معطل کردی گئی لیکن گیارہویں اکرم خان نیازی اور امیر حیدر سنگھا کو ووٹ ڈالنے والے تین ممبران کی رکنیت کیوں معطل نہیں کی گئی ۔اس سلسلہ میں پی ٹی آئی ضلع خوشاب کی اہم شخصیت نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا یا کہ اول تو یہ صوبائی قیادت کا فیصلہ ہے ضلعی قیادت کا نہیں ۔کہ احسان ٹوانہ اور انکے دس ساتھیوں پر ووٹ ڈالنے سے زیادہ پی ٹی آئی کے امیدوار چیئرمین ضلع کونسل صفدر اعوان کو دستبرار کرنے کی وجہ سے سخت ایکش لیا گیا ۔اکرم خان نیازی کی رکنیت اس لیے معطل نہیں کی گئی کہ وہ آزاد حیثیت سے الیکشن لڑ کر کامیاب ہو ئے تھے پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر نہیں۔باقی امیر حیدر سنگھا کو ووٹ دینے والے ممبران ضلع کونسل اس لیے زد میں نہیں آئے کہ پی ٹی آئی کے امیدوار کی جانب سے دستبرادری کے بعد ان کے پاس پارٹی کو ووٹ دینے کا آپشن بچا ہی نہیں تھا۔اس لیے یہ تاثر درست نہیں کہ محض سمیرا ملک کو ووٹ دینے والوں کیخلاف کارروائی ہوئی ہے بلکہ یہ خالصتاََ پارٹی ڈسپلن اور پارٹی کو نقصان پہنچانے کا معاملہ ہے جسے پارٹی کے قواعد و ضوابط کے مطابق ہی ڈیل کیا جارہا ہے۔
محترم قارئین اگرکلک کرنے پر اسطرح کا پیج نظر آئے اور آپ کو خبر کی تفصیلات پڑھنے میں دشواری کا سامنا ہے تو نیچے دیئے گئے طریقہ کار پر عمل کریں





;
پی ٹی آئی نے سنگھا کو ووٹ دینےوالوں کی رکنیت کیوں معطل نہیں کی پی ٹی آئی نے سنگھا کو ووٹ دینےوالوں کی رکنیت کیوں معطل نہیں کی Reviewed by Khushab News on 9:34:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.