بلدیہ جوہرآباد کی صفائی کےلیے مشینری دستیاب نہیں


خوشاب نیوز ڈاٹ کام)میونسپل کمیٹی جوہرآباد کے چیئرمین حاجی ملک محمد اشرف اعوان نے کہا ہے کہ بلدیہ جوہرآباد کی آمدن میں اضافہ کیلئے ہر ممکن جدوجہد کی جائے گی‘ شہریوں کو چاہیے کہ وہ بلدیہ کے ذرائع آمدن بڑھانے کیلئے ہمیں اپنی تجاویز سے مستفید کریں۔ اُنھوں نے ان خیالات کا اظہار اپنے دفتر میں شہریوں کے وفد سے بات چیت کے دوران کیا۔ اُنھوں نے کہا کہ میری خواہش ہے کہ جوہرآباد شہر کو خوبصورت سے خوبصورت تر بنایا جائے اور یہاں کے مکینوں کو زندگی کی بنیادی سہولیات دستیاب ہوں۔ اُنھوں نے کہا کہ شہر کی سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں فراہمی آب اور سیوریج کے نظام کی اصلاح کی ضرورت ہے اور پارکوں کی حالت انتہائی ناگفتہ بہ ہے۔ وہ ان تمام مسائل کو اپنی مخلص ٹیم کیساتھ مل کر حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے۔ بلدیہ جوہرآباد میں ایک روپے کی کرپشن بھی برداشت نہیں کی جائے گی۔ کرپشن کرنیوالے اہلکار اپنا قبلہ درست کر لیں۔ میں خود بھی اپنے دامن کو صاف رکھوں گا اور اپنی ٹیم کے کسی بھی رُکن کے دامن کو کرپشن سے آلودہ نہیں ہونے دوں گا جوہرآباد کا ہر شہری کسی بھی وقت ہم سے جواب طلبی کر سکتا ہے۔ اُنھوں نے کہا کہ بلدیہ جوہرآباد کے پاس صفائی کیلئے مشینری دستیاب نہیں ٹی ایم اے کی پرانی مشینری جو بلدیہ جوہرآباد کے زیر استعمال تھی وہ میونسپل کمیٹی خوشاب کے پاس چلی گئی ہے۔ ملک اشرف اعوان نے بتایا کہ اُنھوں نے صوبائی وزیر ملک آصف بھا سے استدعا کی ہے کہ وہ صفائی کیلئے ضروری مشینری اور آلات کی خریداری کیلئے فنڈز فراہم کریں اگر وہ اپنی ایم پی اے گرانٹ سے ایسا نہیں کر سکتے تو اس ضمن میں وزیراعلیٰ پنجاب سے خصوصی گرانٹ حاصل کریں۔ اُنھوں نے کہا کہ جب تک بلدیہ کے پاس صفائی کی مشینری اور آلات نہیں ہونگے صفائی کا نظام بہتر نہیں ہو سکتا۔ بلدیہ جوہرآباد کے چیئرمین نے کہا کہ شہر میں بلدیہ کے پاس قیمتی پلاٹس موجود ہیں جن کے استعمال کیلئے مختلف تجاویز مرتب کی جا رہی ہیں تاکہ بلدیہ کے مالی وسائل میں اضافہ کیا جا سکے۔
محترم قارئین اگرکلک کرنے پر اسطرح کا پیج نظر آئے اور آپ کو خبر کی تفصیلات پڑھنے میں دشواری کا سامنا ہے تو نیچے دیئے گئے طریقہ کار پر عمل کریں
;
بلدیہ جوہرآباد کی صفائی کےلیے مشینری دستیاب نہیں بلدیہ جوہرآباد کی صفائی کےلیے مشینری دستیاب نہیں Reviewed by Khushab News on 5:10:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.