وادی سون : گھناونے جرم کا سرغنہ گرفتار

خوشاب نیوز ڈاٹ کام) وادی سون سے سودکےکاروبارکا ایک بڑاسرغنہ غوث محمدلوہارنوشہرہ پولیس کی گرفت میں.آگیا 
ضلع خوشاب کا شہر نوشہرہ جو کہ ایک خوبصورت پہاڑی علاقہ ہے اس علاقہ میں بے روزگارنوجوانوں کی کثیر تعداد موجود ہے اور یہ لوگ خطِ غربت سے نیچے زندگی گزاررہے ہیں ضلع خوشاب کا یہ شہر ہیڈ کوارٹرز سے دور ہونے کی وجہ سے ترقی کے لحاظ سے بھی کافی پسماندہ ہے ۔تعلیمی 
لحاظ سے بھی اس شہر کی حالت مایوس کن ہے ۔اس علاقہ میں سکول ،کالج کی تعداد کم ہونے کی وجہ سے زیادہ تر لو گ تعلیم یافتہ نہ ہیں اورکاروبار و روزگار کے موقع نہ ہونے کے برابر ہیں،پہاڑیوں کی کثرت کی وجہ سے اور زرخیز زمین کی کمی کی وجہ سے ذراعت کے شعبہ کی حالت زار بھی حوصلہ شکن ہے ۔لوگ حصول روزگار کے سلسلہ میں دربدر ٹھوکریں کھاتے پھر تے ہیں اور ایسے حالات میں نوجوانوں کی کثیر تعداد غوث محمد لوہار جیسے منی لانڈنگ و سود خوری کرنے والے اشخاص کے ہتھے چڑھ جاتے ہیں۔ ٍٍٍٍ غوث محمد لوہار کا تعلق ضلع خوشاب کے علاقہ تھانہ نوشہرہ کے نواحی گاؤں سبھرال سے ہے ۔ غوث محمد لوہار1969؁ء میں قائداعظم یونیورسٹی اسلام آباد میں بطور سینئر کلرک بھرتی ہوا ،جہاں پر اس نے اپنی سروس کے 15سال گزار کر ریٹائرمنٹ لے لی ۔اس کے بعد عارف ضیاء بریگیڈرکے ساتھ پی اے رہا ،2005 ؁میں ڈالڈا گھی کی ایجنسی کے نام پر سود کے کاروبار سے منسلک ہو گیا ،پھر 2011 ؁میں نام نہاد پراپرٹی ڈیلر بن کر قبضہ گروپ مافیہ کی پشت پناہی بھی کرتا رہا ۔بعد ازاں سارے کام ترک کر کے اور اپنے سابقہ کاروبار سے پیسہ نکال کر سود کے کاروبار کا وسیع پیمانے پر سرعام کاروبار شروع کر دیا ۔یہ بلیک میلنگ منی لانڈرنگ اور سود خوری خود بھی وسیع پیمانے پر کرنے لگ گیا اور سود خوروں اور کالا دھنداکرنے والوں کی پشت پناہی بھی اس کے کارنامہ ہائے میں شامل ہیں
 غوث محمد لوہار کے ہاتھوں علی خان ولد نور خان (۲)ربنواز ولد اللہ داد جیسے کئی لوگ اپنا گھر باہر اور عزت تک داؤ پر لگا بیٹھے ہیں سود کی لعنت ہمارے معاشرے کو دیمک کی طرح چاٹ رہی ہے ۔اس کاروبار میں غریب لوگ مجبور ہو کر سود خوروں سے رجوع کرتے ہیں اور ان سے کچھ رقم بطور قرض لیتے ہیں اور سود کی مد میں 120%زیادہ رقم واپس کرتے ہیں اور اکثر اوقات قرض کے عوض زمین جائیداد اور گاڑیاں وغیرہ گروی رکھ کر قرض لیا جاتا ہے اور سود خور اپنی سود کی رقم نہ ملنے پر ان کی جائیداد اور گاڑیوں پرقابض ہو جاتے ہیں اور مجبور و لاچار افراد اس دلدل سے نکل نہ پاتے ہیں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر خوشاب کی ہدایت پر سود خوروں کے خلاف ایک مہم کا آغاز کیا گیا جس کے دوران سود کے کاروبار سے منسلک سر غنہ غوث محمد لوہار پولیس کی گرفت میں آگیا ۔غوث محمد لوہارنے 2011 ؁میں اپنے سودی کاروبار کو شیلٹر دینے کے لئے پراپرٹی ڈیلر کے شعبہ سے منسلک ہوگیا،2016 ؁میں سود کی شکل میں حاصل ہونے والی رقم جو کہ کروڑوں میں بنتی ہے اس سے اس نےاپنے کئی جگہوں پر گھر بنائے اور 9ایکٹر اراضی رقبہ بمقام نوشہرہ سبھرال میں بلاشرکت غیر خرید کی۔غوث محمد لوہار جیسے لوگ معاشرے میں ناسود کی طرح ہوتے ہیں جن کا قلعہ قمع کرنا بہت ضروری تھا ،غوث محمد لوہار جو شرافت کے روپ دھارے ہوئے تھا کو تھانہ نوشہرہ کی پولیس نے بے نقاب کر دیا ۔جس کے خلاف قانون اور میرٹ کے عین مطابق کاروائی عمل میں لائی جائے گی اور اس کو ضلع خوشاب میں عبرت کا نشان بنایا جائے گا تاکہ ضلع خوشاب کی عوام کو ایسے مکروہ دھندے سے بچایا جائے پولیس کے اس اقدام سے عوام الناس میں خوشی لی لہر دوڑ گئی ہے اور عوام کا پولیس پر ااعتماد پہلے سے کہیں زیادہ بڑھا ہے ۔

وادی سون : گھناونے جرم کا سرغنہ گرفتار وادی سون : گھناونے جرم کا سرغنہ گرفتار Reviewed by Khushab News on 1:16:00 AM Rating: 5

No comments:

loading...
Powered by Blogger.