روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام، ضلع خوشاب سراپا احتجاج

سرور شہید چوک جوہرآباد میں احتجاجی مظاہرہ 

خوشاب نیوز ڈاٹ کام)مرکزی انجمن تاجران جوہرآباد کی کال پر جوہرآباد کے تاجروں نے برما میں نہتے مسلمانوں پر ڈھائے جانیوالے انسانیت سوز مظالم کے خلاف سرور شہید چوک جوہرآباد میں ایک بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین کی قیادت مرکزی انجمن تاجران کے صدر عثمان جنجوعہ ‘ جنرل سیکرٹری رانا سلیم اﷲ اور دیگر راہنماؤں نے کی۔ مظاہرے میں عوامی تحریک کے راہنما صاحبزادہ شمس العارفین ‘ جماعت اہلسنت کے راہنما
www.khushabnews.com
 قاری محمد امین ‘ ممتاز شیعہ عالم دین مولانا سید تقی نقوی‘ جمعیت اہلحدیث کے راہنما مولانا عبدالحفیظ‘ مولانا ابوطلحہ اظہار لحسن‘ جماعت اسلامی کے راہنما عبدالستار طارق‘ بلدیاتی نمائندگان ظفر اﷲ بالی‘ ملک احمد حسن سمیت تاجروں اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر برما کی حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی گئی اور برما میں ہونیوالی مسلم کشی پر اقوام عالم کی مجرمانہ خاموشی کو ہدف تنقید بنایا گیا۔ مظاہرین نے برما کی وزیراعظم سوجی کا پتلہ بھی نظر آتش کیا۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی انجمن تاجران جوہرآباد کے جنرل سیکرٹری رانا سلیم اﷲ اور دیگر مقررین کا کہنا تھا کہ برما میں نہتے مسلمانوں کے خون کی ندیاں بہائی جا رہی ہیں ‘ ماؤں بہنوں اور بچوں کو زندہ جلایا جا رہا ہے اور عالمی برادری او آئی سی‘ عرب ممالک اور اسلامی فوجی اتحاد خاموش تماشائی بنا ہوا ہے۔ اُنھوں نے کہا کہ ملت اسلامیہ جسد واحد کی مانند ہے اگر دُنیا کے کسی کونے میں کسی مسلمان کو کوئی کانٹا بھی چبھے تو ہر مسلمان اس تکلیف کی شدت محسوس کرتا ہے برما

جوہرآباد میں ریلی کا ایک منظر

 میں ہونیوالے مسلمانوں کے وحشیانہ قتل عام پر تمام مسلمانوں کے دل خون کے آنسو رو رہے ہیں اُنھوں نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ برما کے ساتھ سفارتی تعلقات ختم کئے جائیں اور برما کے سفیر کو فی الفور ملک بدر کیا جائے۔ حکومت پاکستان ان وحشیانہ مظالم کو رُکوانے کیلئے اپنے سفارتی ذرائع استعمال کرے۔ او آئی سی ‘ عرب ممالک اور اقوام متحدہ خاموشی کا روزہ توڑ دیں اور مظلوم مسلمانوں کی مدد کیلئے آگے بڑھیں۔دریں
اس خبر کو بھی پڑھیں: مسلم لیگ ن نے پھر پی ٹی آئی کو پیچھے چھوڑدیا
 اثناجمعیت علماء پاکستان کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات مولانا ملک محبوب الرسول قادری نے کہا ہے کہ برما اور کشمیر میں مسلمانوں کا قتل عام او آئی سی‘ اقوام متحدہ اور عالمی امن کے نام نہاد چیمپئن شیطان امریکہ کے حقیقی چہرہ کی نقاب کشائی ہے۔ مسلمان حکمران عقل کے ناخن لیں اور متحدہ اسلامی بلاک قائم کریں۔ ان خیالات کا اظہار اُنھوں نے غلہ منڈی جوہرآباد میں پر امن احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اُنھوں نے کہا کہ رنگون‘ برما ‘ کشمیر صدیوں سے مسلم برادری کا مسکن ہیں یہاں مسلمانوں کی نسل کشی اسلام دشمن قوتوں کی اجتماعی منصوبہ بندی کا نتیجہ ہے۔ اُنھوں نے کہا کہ جبر اور ظلم حقائق کا راستہ نہیں روک سکتے۔ اسلام پھر اسی خطے میں پوری قوت سے اُبھرے گا۔ اُنھوں نے کہا کہ روس اس زمین پر خدا بنا بیٹھا تھا اﷲ نے نہتے افغانیوں سے اس کا بیڑا غرق کروایا۔ اب امریکہ بھی اپنے عبرتناک انجام کو ضرور پہنچے گا۔ اجتماعی دُعا میں نعرے لگائے گئے ۔ علامہ پیر محمد اسماعیل فقیر الحسنی نے کہا کہ جہاد مسلمان کی فطرت ہے مسلمان قربانی سے نہیں ڈرتا مگر برما میں انسانیت سوز قتل و غارت گری قابل برداشت نہیں۔ مسلمانوں کو اسلامی بینک‘ اسلامی فورس اور اسلامی بلاک کے قیام کا فیصلہ کر کے اسلام دشمنوں کی کاروائیوں کا جواب دینا چاہیے دیگر مقررین نے بھی مظاہرہ سے خطاب کیا۔ ،نوشہرہ وادی سون سے فرحان فاروق اعوان   کے مطابق پاکستان فلاح پارٹی اور انجمن 
طلبا اسلام کے زیر اہتمام برما کے مسلمانوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کیلئے ریلی نکالی گئی ۔ریلی کے شرکا نے ہاتھو ں میں پلے کارڈ ، پینا فلیکس اٹھا رکھے تھے۔ ریلی کے شرکا نے برما حکومت کے مظالم کے خلاف شدید نعرے بازی کی ۔ ریلی پرانا لاری اڈا سے مین بازارسے ہوتی ہوئی تکبیرچوک میں پہنچی، ریلی میں وکلا برادری، تاجر برادری، صحافی برادری، سٹوڈنٹس تنظیموں سمیت سیاسی جماعتوں کے کارکنان بھی شریک تھے ریلی کی قیادت پیر حامد عزیزحمیدی پیر ظفر حسین شاہ صاحبزادہ عزیز الحسن حمیدی نے کی ملک آفتاب احمد چوہدری محمود الحسن قاری محمد امین سمیت دیگرمقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افسوس کا مقام ہے کہ ہماری حکومت نے ابھی تک عملی طور پر کچھ نہیں کیا برما میں ہزاروں کی تعداد میں
اس خبر کو بھی پڑھیں:شاکر بشیر اعوان کے ایک اور اہم شخصیت سے اختلافات
 مسلمانوں کو کاٹ دیا ،زندہ جلایا جار ہا ہے برما کے مسلمانوں پر ظلم و بربریت کھلی لاقانونیت ہے مقررین نے مزید کہا کہ اس حسا س نوعیت کے معاملہ پر مسلم ممالک کو خاموشی کی بجائے اکٹھے ہو کر برما میں ہونیوالے مظالم کے خلاف آواز بلند کرنے کی ضرورت ہے ۔اوراس کے ساتھ ساتھ اقوام متحدہ اور تمام انسانی حقوق کی تنظیمیں خاموش تماش بن کر قتل عام کو دیکھ رہی ہے۔جو عالمی طاقتوں کے دوہرے معیار پر سوالیہ نشان ہیں ۔ عالمی برادری مسلمانوں کی نسل کشی کا نوٹس لے ۔ اس موقع پر تمام مقررین کی طرف سے برم کی حکومت کو شدید تنقید کانشانہ بناتے ہوئے مطالبہ کیا گیا کہ روہنگیا مسلمانوں پر ظلم وتشدد اور قتل عام بند کیا جائے ، برما کے سفارت خانے کو فی الفور بند کردیا جائے حکومت سفارتی طور پر برما کے مسلمانوں کیلئے آواز بن کر ان پر ہونیوالے ظلم وستم اور مشکلات کو کم کرنے میں اپنا کردار ادا کرئے۔ آخر میں برما میں شہید کیے جانیوالے 
مسلمانوں اور زخمیوں کی جلد صحت یابی اور مشکلات میں کمی کیلئے خصوصی دعا کی گی۔اسکے علاوہقائدآباد میں  برما کے مسلمانوں پر ہونے والے ظلم کیخلاف ریلی نکالی گئی جس میں پاکستان عوامی تحریک، پی ٹی آئ اور تحریک لبیک یارسول اللہ صل اللہ علیہ وسلم کی قیادت نے شرکت کی

;
روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام، ضلع خوشاب سراپا احتجاج روہنگیا مسلمانوں کا قتل عام، ضلع خوشاب سراپا احتجاج Reviewed by Khushab News on 8:43:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.