بیٹے کو پولیس مقابلے کے نام پر قتل کیا گیا

خوشاب نیوز ڈاٹ کام)مجسٹریٹ دفعہ 30جوہرآباد حسنین احمد انور نے مبینہ پولیس مقابلہ میں ہلاک ہونیوالے اشتہاری امتیاز حسین کی قبر کشائی کے 
www.khushabnews.com
حوالے سے دی گئی درخواست کی سماعت پولیس کی جانب سے ریکارڈ پیش نہ ہونے پر 2نومبر تک ملتوی کر دی۔ سوموار کے روز پولیس نے عدالت کے روبرو موقف اختیار کیا کہ پولیس مقابلہ کا ریکارڈ آر پی او کے پاس ہے جس پر فاضل مجسٹریٹ نے 2نومبر کو ہر صورت میں ریکارڈ پیش کرنے 
کا حکم دیا۔ ڈاکو امتیاز حسین کی والدہ غلام فزاء زوجہ ناظم حسین کی جانب سے درخواست دی گئی تھی کہ اُس کے بیٹے امتیاز حسین کو پولیس نے پانچ اکتوبر کو راولپنڈی سے گرفتار کر کے ناجائز طور پر حراست میں رکھا اور اُسے تشدد کا نشانہ بنا کر اُس کی ہڈیان توڑ دیں بعد ازاں فرضی اور روایتی پولیس مقابلہ ظاہر کر کے اُسے قتل کیا۔ مقامی پولیس نے ضلع کی مقتدر شخصیات کے اثر و رسوخ سے ڈاکٹروں کیساتھ ملی بھگت کی اور اپنی مرضی کی پوسٹمارٹم رپورٹ حاصل کی جس میں پولیس تشدد کے نشانات کو غائب کیا گیا۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ سائلہ اس بے گناہ قتل کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرنا چاہتی ہے اس لئے امتیاز حسین کی قبر کشائی اور غیر جانبدار بورڈ میڈیکل بورڈ کے ذریعے پوسٹمارٹم کرایا جائے۔ 

;
بیٹے کو پولیس مقابلے کے نام پر قتل کیا گیا بیٹے کو پولیس مقابلے کے نام پر قتل کیا گیا Reviewed by Khushab News on 9:33:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.