وادی سون کی خبریں

نوشہرہ وادی سون سے فرحان فاروق اعوان 
بچوں کے عالمی دن کے موقع پر تقریب
 خوشاب نیوز ڈاٹ کام )گراس روٹ ڈویلپمنٹ پروگرام اور محکمہ سوشل ویلفےئر کے زیر اہتمام بچوں کے عالمی دن کے حوالے سے گورنمنٹ ہائی سکول کورڈھی میں ایک سیمینار منعقد ہوا۔ مہمانِ خصوصی وائس چیئر مین اوچھالی یونین کونسل حاجی غلام مصطفی تھے بچوں سے خطاب کرتے ہوئے
www.khushabnews.com
 انہوں نے کہا کہ بچوں کا حق ہے کہ ان کی آواز بھی سنی جائے اور انہیں ایک پر امن محفوظ اور صحت مند ماحول مہیا کیا جائے تاکہ وہ اپنی صلاحیتوں کا اظہار کر سکیں۔ انہوں نے والدین اور اساتذہ پر زور دیا کہ وہ بچوں کی تعلیم و تربییت میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھیں اور ہمارا مذہب بھی ہمیں بچوں سے پیار اور محبت کرنا سکھاتا ہے۔ ڈاکٹر فاروق احمد نے بتایا کہ حکومت پاکستان نے بچوں کے حقوق کے عالمی معاہدہ پر دستخط کئے ہوئے ہیں اس لئے حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ بچوں کے حقوق کی حفاظت کرے اور انہیں تعلیم و تربیت کے مواقع فراہم کرے۔ اس موقع پر سکول کے ہیڈ ماسٹر ہمایوں نے مہمانوں کو سکول کی کارکردگی سے بھی آگاہ کیا اور بچوں کو سکول میں ہر طرح کی سہولیات دینے کے عزم کا اظہار کیااس موقع پر حسین احمد، عبدالحمید،ریاض احمداور غلام حبیب نے بھی موجود تھے۔

 جشن میلاد النبی کی تیاریاں
خوشاب نیوز ڈاٹ کام)وادی سون کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں عید میلاد النبیؐجلوس کی بھرپور تیاریاں جاری ہیں پورے علاقوں کی مساجد میں روحانی محافل کا انعقاد ،چراغاں کیا جائے گا صاحبزادہ عزیز الحسن حمیدی نے کہا کہ نبی کریمؐکی ولادت منانا باعث رحمت وبرکت ہے انہوں نے کہا کہ اس مرتبہ عاشقان رسولؐپورے مذہبی جوش وخروش اور شایان شان طریقے سے منائیں گے ۔


 دیہات صفائی پروگرام اوچھالی پہنچ گیا
خوشاب نیوز ڈاٹ کام) وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف کا دیہات صفائی پروگرام کے سلسلہ میں آج اوچھالی میں کام شروع ہوگیا شہر کے مختلف محلوں سے کوڑا کرکٹ کے ڈھیر اٹھوا کر شہر سے باہر مقرر جگہ پر ڈمپ کرائے گئے جس کی نگرانی اسسٹنٹ کمشنر ڈاکٹر محمد کلیم اور چیئرمین حاجی امجد محمود نے کی وزیر اعلی کے دیہات صفائی پروگرام کو شہریوں نے سراہا ہے اس موقع پر اے سی ڈاکٹر محمد کلیم نے کہا کہ صحت مند معاشرہ کیلئے ضروری ہے کہ اپنے اپنے علاقوں کو صاف ستھرا رکھا جائے تاکہ مختلف موذی امراض سے بچا جائے ۔
;
وادی سون کی خبریں وادی سون کی خبریں Reviewed by Khushab News on 8:50:00 PM Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.