کمزور احتجاج کرتا ہے ،، طاقتور بدلہ لیتا ہے

Image may contain: Malik Rauf Awan, text
)کمزور احتجاج کرتا ہے،، طاقتور بدلہ لیتا ہے،، کبھی گاؤں کے چودھری کو احتجاج کرتے دیکھا؟؟؟ احتجاج کمی کرے گا ہمیشہ،،، کبھی اسرایئل نے احتجاج کیا،، آپ ہولو کاسٹ پر بیان دیں، اسرائیل احتجاج نہیں کرے گا لیکن آپ کے ملک میں آپ کی لاش ملے گی،، اسے کہتے ہیں طاقت،، 
نبی کریمؐ نے کبھی احتجاج کیا؟؟؟ نہیں،،کعب بن اشرف آپؐ کی ہتک کرتا تھا، ابھی مکہ فتح نہیں ہوا تھا،، مسلمان کمزور تھے، لیکن احتجاج نہیں کیا،، صحابہ ؓ سے پوچھا تم میں سے کون کعب کو اس کے گھر یعنی علاقہ میں قتل کر کے آۓ گا،، ایک صحابی گۓ اور اس گستاخ کو اس کے اپنے علاقے میں جہنم واصل کیا، یہ ہے سنت محمدؐ

اور یہی ہے کافر کا علاج،،


یہی وجہ ہے کہ جب بھی کوئی ان مغربی اقوام کی تعریفیں کرتا ہے کہ یہ بڑی دیانتدار، ایماندار، وقت کی پابند، وعدے کی پابند، معاملات میں کھرے وغیرہ وغیرہ۔۔۔ تو میرا خون کھول جاتا ہے کیونکہ بچپن سے اب تک ان " مہذب " اقوام کو ہم نے بڑے بڑے جرائم میں ہی ملوث پایا ہے۔ یہ انکی ظاہری دیانت داری تجارتی Commercial ذہن کی عکاسی کرتی ہے کیونکہ یہ اپنے بچوں کو پڑھاتے ہیں کہ Honesty is the best policy.
یعنی ایمانداری سے کام اس لئے کریں کہ اس میں مادی فوائد ہیں۔ یعنی ایماندار اس لئے نہیں بنیں کہ یہ اللہ تعالیٰ کا حکم ہے اور یہ کہ ہمیں آخرت میں جواب دہی کرنی ہے۔
اس کے علاؤہ آپ نے چند ممالک کی مثال دی ہے۔ اسرائیل کے خلاف کتنی قرار دیں سلامتی کونسل نے پاس کی ہیں لیکن کسی ایک پر بھی اس نے عمل نہیں کیا اور اسرائیل نے دنیا کو مسیج دیا کہ ہم صرف ایک ہی اصول جانتے ہیں کہ
Might is right
جس کی لاٹھی اسکی بھینس۔

ہمیں یاد ھے_ذراذرا

یہی سیکیورٹی کونسل تھی اور یہی تم پانچوں وڈے چودھری(۔امریکا۔فرانس۔برطانیہ۔چائنہ۔روس)
کیس لیکر آنے والا امریکا تھا اور جس پر کیس تھا وہ صدام حسین تھا۔ کون تھا۔۔؟؟ صدام حسین۔ یاد ہے نہ۔ 
جھوٹی دلیلوں، فیک ڈاکیومینٹس، غلط ثبوتوں پر بنا ہوا ماس ڈسٹرکشن ویپنس کا تاریخ کا کمزور ترین کیس۔ مگر تم نے حملہ کرنے کے لیئے ریزولیشن پاس کردی تھی۔ اور تم پانچوں امریکا کی سربراہی میں اور اتحادیوں کے ساتھ مل کر عراق پر چڑھ دوڑے تھے۔
انبیاء کرام کی اس سرزمین پر انسانی خون کی ندیاں بہادی گئیں۔ بچوں اور عورتوں کی چیخیں آسمان ہلانے لگیں۔ عراق کو نسلی اور مسلکی بنیادوں پر ٹکڑوں میں بانٹ دیا گیا۔زمیں کا چپا چپا چھانا گیا مگر ماس ڈسٹرکشن ویپنس کا کہیں نام نشان بھی نہ تھا۔ 
پھر تمہارے ہی اک چوہدری برطانیہ کے وزیراعظم نے ٹی وی پر آکر قبول کیا کے ہم پروپیگینڈہ میں آگئے تھے اور غلط کردیا۔۔۔۔۔آہ

یہی سیکیورٹی کونسل تھی،
پھر کیس لیکر آنے والا امریکا تھا اور جن پر کیس تھا وہ ملا عمر اور اسامہ بن لادن تھے۔ 
وہ ہی جھوٹی گواہیاں، وہی جھوٹے ثبوت کے اسامہ نے ٹون۔ٹاورس پر حملہ کیا ہے اور ملا عمر اس کو امریکا کے حوالے نہیں کررہا۔
تم نے پھر حملہ کرنے کی ریزولیشن پاس کردی۔ اک بار پھر امریکا دنیا کی بیالیس ملکوں کی جدید فوج جو پوری دنیا کی آرمی کا ساٹھ فیصد ہے کو لیکر غریب افغانیوں پر چڑھ دوڑا۔ اور پھر جو کچھ ہوا وہ بھی اک تاریخ ہے۔ مگر وقت نے ثابت کیا کے ٹون۔ٹاورس حملہ تم نے خود کروایا تھا۔

اور پھر یہی سیکیورٹی کونسل تھی
کیس مشرقی تیمور اور دوسرا پھر جنوبی سوڈان کا تھا۔ تم نے دنوں کے اندر رائیٹ آف سیلف ڈٹرمینشن کے تحت رائے شماری کرواکر، دونوں مسلم ریاستوں کے ٹکڑے کرکے اپنی عیسائی ریاستیں قائم کروا دی۔

اور پھر کل
یہی کونسل اور وہی تم پانچ، کیس لیکر آنے والا پاکستان تھا اور مجرم نریندر مودی تھا۔ 
سچے ثبوتوں اور ٹھوس گواہیوں پر مبنی کیس کے انڈیا نے کشمیر کی تاریخی حیثیت کو ختم کیا ہے، پورے خطے کے امن کو داو پر لگادیا ہے۔ کشمیر میں انڈین آرمی روزانہ معصوم عورتوں کی عصمت دری کرتی ہے، وہاں روزانہ نوجوانوں کو خون میں نہلایا جاتا ہے۔ پچھلے پندرہ روز کرفیو کی وجہ سے لوگوں کے کھانے کی چیزیں اور دوائیاں ناپید ہوگئی ہیں، مریض تڑپ رہے ہیں۔

مگر تم نے کوئی ریزولیشن پاس نہیں کی، کوئی آفیشل مذمتی اسٹیٹمینٹ تک جاری نہ کیا، سوائے تشویش ظاہر کرنے کے۔
اگر یہی کیس لیکر آنے والا
کوئی مائیکل یا ڈیوڈ یا کمار ہوتا اور ملزم احمد، محمد یا عبداللہ ہوتا تو پوری دنیا میں جنگ کے نقارے بج چکے ہوتے اور اس وقت تک تمہاری نیٹو کے ایف سیونٹین اڑان بھر چکے ہوتے۔۔۔۔

یہ علم، یہ حکمت، یہ تدبر، یہ حکومت
پیتے ہیں لہو، دیتے ہیں تعلیم مساوات۔انیکا حل اور طرلقہ وہی ہیے جو حضور پاک نے غزوہ بدر میں 313 جانثاروں اور جانبازوں نے اس وقت کے فرعون نمرود قرلیش مکہ کی رعنیویت کو خاک میں ملا دیا یہ عربی اپنے ہاتھ سے کھودے ہوے کنوہیں میں گرے گے اور برباد ہونگے آج چوبیسواں روز ہو گیا کرفیو لگے نوے لاکھ کلمہ گو مقبوضہ کشمیر کے بچے عورتیں بیمار اس بلیک آوٹ میں ہزاروں دختران کشمر اپنی عزت آبرو گنوا بیھٹی ہیں ایک لاکھ سے زیادہ نوجوانوں کو عقوبت خانوں اندھا کرکے شہید کردیا گیا ہیے ان عربوں کی تباہی اور بربادی اللہ کریم نے لکھ دی ہیے ہمارے سپہ سالار کو پورے ملک میں ایمرجنیسی کا نفاذ کرنا چاہیے انشااللہ فوجی ٹرنییگ کیمپوں میں لاکھوں کی تعداد میں نوجوان فوجی ٹرنییگ لینے کے لیے تیار ہیں یہ سیاسی قیادتیں اب دھرنوں ہڑتالوں اور ریلیوں کا ڈرامہ ختم کرہیں عمران خان کو پہل کرنی چاہیے اپنے دونوں بچوں کو فوجی ٹرنینگ کے لیے والنٹیرز کرے خاندان شرلفیآ کے ٹنوں منوں اور تمام نوجوان اسی طرح خاندان زرداری کے بلاول انیڈ کمپنی فضل الرحمان انیڈ بردارز کو تو رانی توپ چلانے کی ٹرنییگ دہینی چاہیے اور ہر ہفتے ایل او سی باڈرز پے جا کر مکار گھٹیا نازی مودی کو للکارنا چاہیے اور اس طرح ہمارے ان جری بہادر افواج کو بھی یقین ہوگا کہ اس آر پار کی جنگ میں ہمارے شانہ بشانہ پوری 22کڑور عوام اور سیاسی قیادت بھی کھڑی ہیے 

...........
 مصنف ملک عبدالروف اعوان فری لانس انوسٹیگیٹو جرنلسٹ کالم نگار ممبرز ایمنسٹی انٹرنشنیل و سوشل میڈیا بلاگرز صدر سول سوساہیٹئ ہیں 
کمزور احتجاج کرتا ہے ،، طاقتور بدلہ لیتا ہے کمزور احتجاج کرتا ہے ،، طاقتور بدلہ لیتا ہے Reviewed by Khushab News on 6:33:00 PM Rating: 5
تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.